رشتے کیسے نبھائے جاتے ہیں؟(مکمل تحریر پڑھیں)

سوائے نکاح یا خونی رشتوں کے۔

اگر آپ کی کوئی دوست ، بہت اچھی دوست ، یا بیسٹ فرینڈ آپ کو بات بات پر تنقید کر رہی ہے یا دوسروں کے سامنے آپکی برائیاں بیان کر رہی ہے اور کہے کہ یار مزاق تھا اور آپ بھولے بن کر پھیکی سی ہنسی ہنس دیتے ہیں۔ مزاق کرنا اور اڑانا دو مختلف چیزیں ہیں۔

دوستوں کی بات برداشت کرنا اور اپنی عزت نفس کو فوقیت دینا بھی دو مختلف باتیں ہیں۔

اگر آپ کا دوست آپکے لیے ، آپکے دل کے لیے ٹاسک بن رہا ہے۔ آپ اس سے بات شئیر کرتے تھے مگر اب ڈرتے ہیں کہ یہ بات اس سے کریں گے تو دوستی کا تعلق خراب ہو گا۔ اور آپ کو اس تعلق سے کسی قسم کا اطمینان نہیں مل رہا تو مہذبانہ انداز سے تعلق کو ختم کر دینا بہتر ہے۔

کیونکہ دوست مل ہی جاتے ہیں۔ آپ کو دکھ ضرور ہوتا ہے مگر وہ دکھ عارضی ہو گا۔ آپ خود کا دل مسلسل ہرٹ کروا رہے ہیں یہ آپکو کمزور کرتا جائے گا یہ آپ کو دوسروں پر انحصار کرنے کے لیے کوشاں رہے گا۔

بہت سے لوگوں سے ہمارے اچھے تعلقات ہیں جو ہمیں سوشل میڈیا پر ملے ہوں وہ ہمارے اچھے دوست ہو سکتے ہیں مگر بیسٹ فرینڈ نہیں۔ ممکن آپ کو کوئی بیسٹ فرینڈ ملے ۔ مگر کب تک ؟ میں نے ایسی لڑکی بھی دیکھی ہے جو ایک ماہ میرے ساتھ رہی اور جب میں اسکے مطابق نہ ڈھلی تو وہ کہیں اور چلی گئی اور اب بھی وہ ہر ماہ دوست بدل رہی ہے۔ اور پچھلی کو بھولتی جا رہی ۔ کوئی آپ کو روز کے چوبیس گھنٹے نہیں دے سکتا اور ایسا نہیں کہ جو آپکے ساتھ چوبیس سو گھنٹے رہے وہ آپکا دوست ۔

دوست وہ ہے جس سے بات کر کہ آپ کے دل بوجھ ہلکا ہو ۔ دوست وہ ہے جو آپ کو سمجھے۔

دوست کون ہوتا ہے؟

  1. دوست تو وہ ہے جو 
  2. آپ سے محبت کرے 
  3. وہ جو ہر مشکل میں ساتھ دے
  4. آپ کے ساتھ ہمیشہ کھڑا رہے
  5. جو آپ کی برائیاں دوسروں کے سامنے بیان نہ کرے
  6. آپ کی غلطی پر آپ کو ڈانٹے ، 
  7. سمجھائے مگر اکیلے میں
  8. آپ کو دوسروں کے سامنے سراہے
  9. آپ کے لیے دعائیں کرے۔
  10. آپ کے لیے پوری دنیا سے لڑ جائے
  11. آپکا ہر راز جانتے ہوئے آپ سے دوستی قائم رکھے 
  12. آپ کا راز فاش نہ کرے
  13. آپ کو جج نہ کرے
  14. آپ کو ہمیشہ سنے
  15. آپ کو ترجیح دے
  16. آپکی دوستی اتنی مضبوط ہو کہ کوئی توڑ نہ سکے
  17. جو آپ کو گناہوں کی دلدل سے نکالے۔
  18. جو آپ کو جنت کا راستہ دکھائے۔

جو آپکی دنیا و آخرت دونوں حسیں بنا دے

وہ ہے دوست

یقینا تمہارے دوست اللہ تعالیٰ اور اسکا رسول اور ایمان والے ہی ہیں جو نماز قائم کرتے ہیں

زکوٰۃ ادا کرتے اور وہ رکوع کرنے والے ہیں۔

سورۃ المائدہ

آیت نمبر 55

دوسرا تعلق محبت کا۔

کسی کو آپ سے یا آپکو کسی سے محبت ہے تو اسے جائز و حلال طریقے سے اپنی زندگی میں شامل کریں ۔ نکاح کریں۔ بڑوں کو شامل کریں اور ایک خوبصورت انداز میں پروپوزل بھیجیں ۔ اور عزت سے گھر لائیں۔ 

وہ محبت نہیں ہے جو آپکی راتوں کی نیندیں حرام کر دے ۔

جو آپ کو روز رلائے

آپ کو روز ۔ بار بار جان کر ہرٹ کرے کہ یہ تو اور کسی کے پاس جائیں گے نہیں واپس میرے پاس ہی آنا

ایسے دوسرے فرد کو مزہ آنے لگتا ہے آپ کو تکلیف دینے کا۔۔

محبت وہ نہیں ہے جناب جو آپ کو گناہوں کی طرف دھکیلے ۔ جس کی خواہشات ناجائز ہوں جو آپ سے غلط ڈیمانڈ کرے محبت کے نام پر۔

Related Post

وہ ہوس ہے۔

محبت آپ کو سکون دیتی ہے ۔

اللہ کی محبت سکون دیتی ہے نا ؟

تو جب کسی مخالف جنس سے محبت ہو وہ کیوں اذیت دیتی ہے آپ کو ؟

کیونکہ وہ تعلق ٹاسک ہوتا ہے۔ آپ محبت کی باتوں میں آ کر غلط ڈیمانڈ پوری کر دیں گے تو سکون کیسے ملے گا۔

آپ ایک کے ہوتے ہوئے چار مزید کو دیکھیں گے تو سکون پھر بھی نہیں ملے گا ۔۔

یہاں میں کسی ایک جنس کی بات نہیں کر رہی۔ نہ اکیلے مرد کی نہ عورت کی۔

میں دونوں کی بات کر رہی

جہاں لڑکے محبت کے نام پر دھوکہ دیتے وہاں لڑکیاں بھی بہت کچھ کرتی ہیں۔

جہاں لڑکے اپنی حدود جانتے وہاں لڑکیاں بھی ایسی ہیں جنہیں اپنی حدود کا علم ہے۔

ایسا تعلق جو آپ کو اندر سے مار رہا ہے۔ وہ تعلق ٹاکسک ہے۔ اسے ختم کر دیں۔

خونی رشتوں میں آپ تعلق ختم نہیں کر سکتے مگر انہیں پیار سے سمجھا سکتے ہیں۔

اپنے منکوحہ سے آپ بات بات پر تعلق ختم نہیں کر سکتے ۔

آپکو بہت سی باتوں کو لے کر ساتھ چلنا ہوتا ہے۔

آپ کو اس رشتے کو نبھانے کی ہر ممکن کوشش کرنی ہوتی ہے۔

( بقیہ کسی اور تحریر میں ان شاءاللہ )

خوش رہیے دعاؤں میں یاد رکھیں

View Comments (1)

Recent Posts